WickR

March 2nd, 2018 / 11:02 PM

spying-on-your-competition.jpeg

سنا ہے  گورنمنٹ سب کچھ دیکھ رہی ہے۔ یہ بھی سنا ہے کہ گورنمنٹ سب کچھ سن رہی ہے۔ اسے ایک چیز کا دلاسہ تو ہوتا ہے کہ اور کوئی سنے یا نہ سنے  کم از کم کوئی تو ہے جو میری باتیں سن رہا ہے۔ اکثر لوگوں کے لیے یہ فکر کی بات نہیں لیکن مجھے کبھی کبھی اس حقیقت سے خوف آتا ہے کہ وہ جذبہ جسے میں کسی تیسرے یا شاید کبھی کسی دوسرے سے بھی بانٹ نہ سکوں وہ کوئی مٹی سے بنا ہوا انسان جو اسی گورنمنٹ کے لیے کام کر رہا ہے وہ ان جذبوں کو دیکھ بھی رہا ہے سن بھی رہا ہے اور سمجھ بھی رہا ہے۔ کسی ایک انسان کے پاس ایسی طاقت کا آجانا خطرے کی علامت ہے جو طاقت صرف انسان سے اوپر کی طاقت ہی رکھ سکتی ہے. کسی کا پیچھا کرنا بہت مہنگا ہے.یہ کسی کی سنی ہوئی بات نہیں.خود کر کے دیکھ چکا ہوں . لوگوں سے مار پڑنے کا ڈر پولیس سے پکڑے جانے کا خوف،  اور ساتھ ہی ساتھ اس چیز کا بھی امکان کہ جس کا پیچھا کر رہا ہوں وہ بچ کر ہی نہ نکل جائے موجود رہتا ہے. لیکن اس بندے کےلیے کیا خوف جو میرے لکھے ہوئے ہر لفظ کو پڑھ رہا ہے، ہر پیغام اس کی آنکھوں سے گزرتا رہے، کوئی تصویر اس سے چھپی نہیں. میرے اکیلے کی بات ہو تو شاید نہ سمجھوتا کر بھی لوں. لیکن گفتگو کا کوئی دوسرا سرا بھی ہوتا ہے. پچھلے کچھ ماہ کے اخبارات ایسی خبروں سے بھرے ہیں جس میں حکومت کے لوگوں نے اور اداروں نے عام شہریوں کی گفتگو پر نظر رکھی. میں نے اپنے ساتھ کام کرنے والے ایک ڈاکٹر کو اس حقیقت کے بارے میں بتایا. تم اس نے بھی وہی کہا جو اس سے پہلے پانچ لوگ بول چکے تھے کہ میرے پاس ایسے کون سے راز ہیں جواگر گورنمنٹ کو پتہ بھی چلے تو میرا کوئی نقصان ہو جائے گا. گھر آ کر میں نے فرصت کے لمحے میں ایک نیی ایپلیکیشن دریافت کی جس کی سب سے بڑی خوبی یہ ہےکہ اس پر کی جانے والی گفتگوکوئی تیسرا نہیں سن سکتا. کم ازکم ابھی تک تو صورتحال ایسی ہی ہے. مگر گورنمنٹ آپکو کب سکون سے رہنے دے گی . لیکن جونہی میں نے یہ اپلیکیشن  چلائی وہ گفتگو کرنے والا کوئی نہیں تھا. مجھے ایسا لگا ویران قصبے میں آگیا . وہاں وہ کمبخت بھی نہیں تھا جو میری ہر بات پڑھاتا ہے سنتا ہے سمجھتا ہے. مگر وہ وہاں ضرور تھا جو صرف بات ہی نہیں دل کی ہر خواہش کو جانتا ہے لیکن پھر بھی میری ساری دعائیں پوری نہیں کرتا

Featured-Image-wickr.jpg